شاندانہ گلزار کے اغواء کی درخواست پر فریقین سے جواب طلب

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ نے شاندانہ گلزار کے اغواء کی درخواست پر فریقین سے جواب طلب کر لیا۔
پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی سابق رکن قومی اسمبلی شاندانہ گلزار کے مبینہ اغواء کے خلاف درخواست پر سماعت ہوئی جس کے دوران اسلام آباد ہائیکورٹ نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔
شاندانہ گلزار کے والد صباحت گلزار خان کی جانب سے پولیس کے ہاتھوں بیٹی کے مبینہ اغواء کیخلاف دائر درخواست میں آئی جی اسلام آباد پولیس، ڈی ایس پی بنی گالہ، ایس ایچ او بنی گالہ کو فریق بنایا گیا ہے۔
اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست کی سماعت جسٹس بابرستار نے سماعت کی، درخواست گزار کی جانب سے وکیل شیر افضل مروت عدالت میں پیش ہوئے۔
صباحت گلزارخان نے درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ پولیس کی وردی میں ملبوس افراد نے گھر میں گھس کر بیٹی کو بندوق کی نوک پر اغواء کیا، ایس ایچ او بنی گالہ کو شکایت کی لیکن کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔
والد کی جانب سے استدعا کی گئی ہے کہ شاندانہ گلزار کسی کیس میں ملوث نہیں تو انہیں فی الفور رہا کرنے کے احکامات جاری کیے جائیں۔
بعدازاں عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے درخواست پر سماعت 15 اگست تک ملتوی کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں