عمران خان،ساتھیوں کے ریاست، اداروں کیخلاف بیانات پر قانونی کارروائی کا فیصلہ

لاہور: سابق وزیراعظم عمران خان کے الزامات اور پاک فوج کے ترجمان کی طرف سے جاری کردہ بیان کے بعد وفاقی حکومت نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئر مین اور ان کے ساتھیوں کے ریاست اور اداروں کے خلاف بیانات پر قانونی کارروائی کا فیصلہ کر لیا ۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت لاہور میں اہم اجلاس ہوا،اجلاس میں سینئر رہنماؤں نے شرکت کی۔

اجلاس کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ ملک میں سرکاری املاک اور عمارات پر جلاؤ، گھیراؤ، پر تشدد سرگرمیوں اور اداروں کے خلاف بے بنیاد الزامات پر وفاقی حکومت اپنے اختیارات استعمال کرے گی۔

اجلاس کے دوران گزشتہ روز سابق وزیراعظم عمران خان کے الزامات کے بعد ترجمان پاک فوج کے بیان کی روشنی میں پی ٹی آئی چیئر مین اور ان کے دیگر ساتھیوں کے ریاست اور اداروں کے خلاف بیانات پر قانونی کارروائی کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کے لیے آئینی و قانونی ماہرین پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔

اجلاس کے دوران گورنر ہاؤس پنجاب سمیت دیگر شہروں میں جلاؤ، گھیراؤ اور پرتشدد سرگرمیوں پر الگ سے کارروائی ہوگی جبکہ نجی املاک پر پی ٹی آئی راہنماؤں اور کارکنوں کے حملوں پر بھی قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی آئین اور قانون کے منافی اقدامات پر قانون کے روشنی میں تمام ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی ہو گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں